75

’طیب اردگان کو اپنے ملک کیوں بلایا؟‘ سوڈان سے بڑا مسلمان ملک ناراض ہوگیا، یہ ملک سعودی عرب نہیں بلکہ۔۔۔ مسلم دنیا کے لئے افسوسناک خبر آگئی

قاہرہ(مانیٹرنگ ڈیسک) امت مسلمہ کا اتحاد ایک ایسا خواب ہے جس کی تعبیر ہنوز ممکن نظر نہیں آتی۔ اتحاد تو کیا ہو گا الٹا اختلافات ہیں کہ آئے روز شدید سے شدید تر ہو تے جا رہے ہیں۔ اس لڑائی جھگڑے میں تازہ ترین اضافہ اس وقت ہوا جب ترک صدر رجب طیب اردگان سوڈان کے دورے پر گئے اور مصر اس بات پر سخت ناراض ہو گیا۔ عالمی میڈیا کے مطابق ترک صدر کے دورہ کے بعد بعد مصر اور سوڈان کے تعلقات کشیدگی کی نئی انتہا کو پہنچ گئے ہیں۔

’اس مسلمان ملک کے وزیراعظم کو سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے فوری استعفیٰ دینے کا حکم دیا اور ساتھ ہی تقریر بھی خود لکھ کر دی‘
مصری حکوت کی جانب سے تو اس معاملے میں کوئی بیان سامنے نہیں آیا البتہ مصری میڈیا ضرور اپنی حکومت کی ترجمانی کر رہا ہے۔ سوڈان کو مسلسل تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا جا رہا ہے کہ ترکی کے ساتھ اس کے تعلقات مصر کے خلاف سازش ہیں۔ حالیہ دنوں سوڈان، ترکی اور قطر کی افواج کے سربراہوں کے درمیان بھی ملاقات ہوئی ہے اور اس پر بھی مصر سیخ پا ہے۔
سوڈان کی ساتھ مصر کی کشیدگی کی ایک اور بڑی وجہ دریائے نیل پر تعمیر کیا جانے والا ڈیم ہے جسے مصر اپنے مفادات کے خلاف قرار دیتا ہے۔دونوں ممالک ایک دوسرے کو غیروں سے ڈالر لے کر اپنوں کے گھر میں آگ لگانے کا الزام دے رہے ہیں، اور یہ معاملہ سدھرنے کی بجائے مزید بگڑتا جا رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں